پاکستانی نژاد ساجد جاوید مطلوبہ ممبران کی حمائت نہ ملنے پر وزارت عظمیٰ کی دوڑ سے باہر – Kashmir Link London

پاکستانی نژاد ساجد جاوید مطلوبہ ممبران کی حمائت نہ ملنے پر وزارت عظمیٰ کی دوڑ سے باہر

لندن (کشمیر لنک نیوز) بورس جانسن کے بطور وزیر اعظم مستعفی ہونے کے بعد چند نمایاں شخصیات میں شامل پاکستانی نژاد ساجد جاوید وزارت اعظیٰ کی دوڑ سے باہر ہوگئے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق ابتدائی مرحلوں میں ساجد جاوید صرف 12 ارکان پارلیمنٹ کی حمایت حاصل کر سکے اور ڈیڈ لائن سے چند لمحے قبل انتخابی عمل سے دست برداری کا اعلان کردیا۔ کنزرویٹیو پارٹی کے نئے لیڈر کے انتخاب کے پہلے مرحلے میں کل سہہ پھر ووٹنگ ہوگی۔

ساجد جاوید ٹوری پارٹ کے اہم ترین رہنمائوں میں سے ایک ہیں یہی وجہ ہے کہ انہیں مختلف اوقات میں مختلف وزارتوں کے قلمدان سونپے گئے۔ انکی صلاحیتون کے پیش نظر بہت پہلے یہ بات میڈیا میں آگئی تھی کہ ساجد جاوید میں وہ خوبیاں ہیں جو انہیں برطانیہ کا پہلا امیگرینٹ وزیر اعظم بنا سکتی ہیں۔ اب جبکہ بورس جانسن نے غیر متوقع طور پر عوامی پریشر میں آکر جلد وزارت عظمیٰ سے استعفیٰ دیدیا تھا تو ساجد جاوید ہاٹ امیدوار تھے تاہم حقیقت میں ایسا نہ ہوسکا۔

50% LikesVS
50% Dislikes