امن کے عالمی دن پر مقبوضہ کشمیر کی عوام پر ہونے والے ظلم و ستم پر آواز اٹھانی چاہیئے؛ مقررین

اولڈہم (محمد فیاض بشیر) امن کے عالمی دن پر مسلم لیگ ن برطانیہ کے مرکزی رہنما راجہ مقصود حسین کاکڑوی نے پاکستان سے آئے سابق تحصیل ناظم میاں نواز شریف کے دست رات خان سجاد خان اور جموں کشمیر تحریک حق خودارادیت کے چئیرمن راجہ نجابت حسین کو مظلوم کشمیریوں کی آواز اٹھانے پر حکومت پاکستان کی جانب سے ستارہ پاکستان ملنے پر عشائیہ دیا ۔ قونصل جنرل طارق وزیر ، کونسلر یاسمین ڈار، چوہدری بشیر احمد رٹوی ،اولڈہم کونسلرز عقیل سلامت ، محمد الیاس ، شعیب اختر سیاسی سماجی شخصیات شبیر کاکڑوی ، چوہدری خورشید احمد، چوہدری محمد ذوالفقار ، فرزانہ افضل، کونسلر نائلہ شریف،کامران غفار ، راجہ صغیر اور کمیونٹی کی دیگر سرکردہ شخصیات نے شرکت کی۔

اس موقع پر خان سجاد خان کا کہنا تھا کہ ہمارا دل خون کے آنسوؤں روتا ہے ہم چاہتے ہیں دنیا میں امن ہو لیکن مقبوضہ کشمیر میں ہماری ماؤں بہنوں پر ظلم وستم ہو رہا ہے جو ہم سے برداشت نہیں ہو رہا انکا کہنا تھا اس موقع پر اقوام متحدہ اور مغربی ممالک سے مطالبہ کرتا ہوں اس مسئلہ پر آواز اٹھائیں اور کشمیریوں کو انکا پیدائشی حق خود ارادیت دلوائیں۔ راجہ نجابت حسین نے کہا یوم امن کے موقع پر ہمارا پیغام ہے مقبوضہ کشمیر پر ہونے والے ظلم و ستم بند ہونے چائیں انکا کہنا کہ دنیا بھر میں بسنے والی کشمیری کمیونٹی ہمیشہ کی طرح مودی کی فسطائ حکومت کے خلاف باہر نکلیں اور مظلوم کشمیریوں بارے آواز اٹھائیں اور کشمیریوں کو حق خود ارادیت ملنے تک جدوجہد جاری رکھیں۔

قونصل جنرل طارق وزیر کا کہنا تھا کہ راجہ نجابت حسین کی کشمیر بارے کاوشوں سے پوری دنیا آگاہ ہے انکا مذید کہنا تھا کہ پاکستان کے سیلاب زدگان کی برطانیہ میں بسنے والی پاکستانی و کشمیری کمیونٹی جتنی آسانیاں پیدا کر سکتی ہے اپنا کردار ادا کرے۔ کونسلر یاسمین ڈار کا کہنا تھا کہ امن کے عالمی دن پر ہمیں مقبوضہ کشمیر اور فلسطین کی عوام پر ہونے والے ظلم و ستم پر آواز اٹھانی چاہیے ۔ میزبان راجہ مقصود حسین کاکڑوی کا کہنا تھا کہ راجہ نجابت حسین کی پچھلے پچاس برس سے مقبوضہ کشمیر کی آزادی کے لیے کاوشیں قابل ستائش ہیں ستارہ پاکستان کا اعزاز ملنے پر ہمارے سر فخر سے بلند ہیں وہ دن دور نہیں جب کشمیر میں آزادی کا سورج طلوع ہو گا ۔ کونسلر نائلہ شریف، فرزانہ افضل و دیگر نے بھی کشمیریوں پر ہونے والے ظلم و ستم پر مذمت کرتے ہوئے اقوام متحدہ اور عالمی برادری سے اس پر آواز اٹھانے اور کشمیریوں کو حق خود ارادیت دینے کا مطالبہ کیا۔ برطانیہ میں بسنے والی پاکستانی و کشمیری کمیونٹی نے امن کے عالمی دن پر اقوام متحدہ اور عالمی برادری کو باور کروایا ہے کہ دنیا میں امن تب ہی ممکن ہے جب ذات پات رنگ و نسل اور مذہب سے بالاتر ہو کر اسکا حل کیا جائے۔