ریممبرنس ڈے 2020؛ کورونا پابندیوں کی وجہ سے محدود تقریبات میں شہدا کو خراج عقیدت – Kashmir Link London

ریممبرنس ڈے 2020؛ کورونا پابندیوں کی وجہ سے محدود تقریبات میں شہدا کو خراج عقیدت

لندن (اکرم عابد) برٹش اور کامن ویلتھ ممالک کے فوجیوں کی عالمی جنگوں میں قربانیوں کی یاد میں منعقدہ تقاریب میں وطن کیلئے جانیں قربان کرنے والے فوجیوں کو خراج عقیدت پیش کیا گیا۔
برطانوی دارالحکومت لندن میں منعقدہ تقریب میں ملکہ برطانیہ، وزیراعظم بورس جانسن، سابق وزرائے اعظم سر جان میجر، ٹونی بلیئر، ڈیوڈ کیمرون، تھریسامے، قائد حزب اختلاف سر کیئر سٹارمر اور دیگر اہم شخصیات نے شرکت کی۔


کورونا وبا کی وجہ سے پہلی بات یہ تقریب عوام کیلئے نہ تھی اور نا ہی روائیتی بینڈز کی دھنیں سنائی دی گئیں۔ دو منٹ کی خاموشی کے بعد شہزادہ چارلس، شہزادہ ولیم اور وزیر اعظم سمیت دیگر افراد نے بھی پھولوں کی چادر چڑھائی۔

دوسری جانب شاہی خاندان سے لاتعلق کردیئے گئے چھوٹےشہزادے ہیری نے اس دفعہ اپنی باغی اہلیہ میگھن کیساتھ یہ دن منا کر دنیا بھر کے میڈیا کو اپنی طرف متوجہ کرلیا، دونوں نے نجی طور پر اس دن کو منایا اور اپنے ذاتی باغ کے پھولوں سے دو شہدا کی قبروں کو ان سے سجایا۔ تاہم اس جوڑے کی اس حرکت کو جہاں سراہا گیا وہیں بہت سے لوگوں نے اس پر تنقید بھی کی۔

لندن میں ہر سال ہونے والی اس قومی تقریب میں عموماً بڑی تعداد سابق فوجیوں اور فوج کے ممبرز سے منسلک لوگ شرکت کرتے ہیں لیکن برطانوی میڈیا کے مطابق اس دفعہ 30 سے ​​بھی کم سابق فوجیوں نے شرکت کی ملکہ جو کالے رنگ کی ہیٹ اور کوٹ میں ملبوس تھیں ، خارجہ ، دولت مشترکہ کی عمارت کی بالکونی سے نظر آئیں ، جب ان کے بیٹے نے ان کی جانب سے پھولوں کی چادر چڑھائی۔

برطانوی نشریاتی ادارے بی بی سی کے مطابق تقریب میں عوام کے وہ ممبران اس مرتبہ کورونا وبا کے باعث شامل نہیں تھے جو عام طور پر پورے ملک سے یہاں آنے کے لئے سفر کرتے ہیں اسی طرح فوجیوں کی بہت بڑی تعداد بھی موجود نہیں تھی۔

50% LikesVS
50% Dislikes