کورونا لاک ڈائون کی وجہ سے ٹیکسی کا بزنس ٹھپ ہوکر رہ گیا ہے، حکومت معاونت کرے؛ کیب ڈرائیورز – Kashmir Link London

کورونا لاک ڈائون کی وجہ سے ٹیکسی کا بزنس ٹھپ ہوکر رہ گیا ہے، حکومت معاونت کرے؛ کیب ڈرائیورز

آشٹن انڈر لائن (محمد فیاض بشیر) برطانیہ میں تیسرے قومی لاک ڈاؤن سے ٹیکسی کاروبار بری طرح متاثر ہوا ہے کیونکہ قومی لاک ڈاؤن سے لوگوں کی نقل وحرکت محدود ہو گئی ہے جس سے ٹیکسی کاروبار میں مندی ہے ۔ آشٹن کونسل میں کام کرنے والے ٹیکسی ڈرائیور مارٹن گرین کا کہنا تھا کہ لاک ڈاؤن کی وجہ سے ہمارے کاروبار میں 50 فیصد سے زائد کمی آئی ہے میں نے ماضی میں سخت و مشقت کی ہوئی ہے جسکی وجہ سے معاشی طور پر اتنا متاثر نہیں ہوں لیکن ہم پکاڈلی ٹرین سٹیشن مانچسٹر میں ہفتے میں دو دفعہ مسافروں کو ضرور لیکر جاتے تھے پچھلے چند ہفتوں سے کسی بھی مسافر کو نہیں لیکر گیا۔

چوہدری انور کا کہنا تھا کہ حکومت اور مقامی کونسل معاشی طور پر ہماری مدد نہیں کر رہی ہے اور کاروبار بھی بری طرح متاثر ہے ہمارے لیے گاڑیوں اور خاندان کی کفالت میں مالی طور پر شدید مشکلات کا سامنا ہے امید ہے حکومت ہماری مالی معاونت کرے گی۔ ندیم اصغر نے کہا کہ میں سولہ برس سے ٹیکسی کاروبار سے منسلک ہوں ۔ برطانیہ میں وائرس سے ہونے والے لاک ڈاؤن سے مسافروں کی آمدورفت نہ ہونے کے برابر ہے جس سے ہماراکاروبار بری طرح متاثر ہوا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ کاروبار میں مندی سے حکومت جو مالی معاونت کر رہی ہے ناکافی ہے جس سے گزر بسر مشکل ہے۔

ریاض حسین کا کہنا تھا کہ کورونا وائرس کی وجہ سے برطانیہ میں تیسرے لاک ڈاؤن سے ٹیکسی کا کاروبار تباہی کے دہانے پر ہے ہم معاشی طور پر سخت مشکلات کا شکار ہیں حکومت اور مقامی کونسل سے مطالبہ کرتے ہیں کہ ہمارے کاروبار کو بچانے کے لیے ہماری مالی معاونت کی جائے تاکہ ہم اپنے خاندان کی کفالت کے ساتھ خود بھی ذہنی دباؤ سے نجات پا سکیں کاروبار میں مندی سے ہماری جسمانی اور ذہنی صحت بری طرح متاثر ہو رہی ہے ۔

50% LikesVS
50% Dislikes