ٹاور آف لندن کا ایک کوا مزید کم ہوگیا، کیا تاج برطانیہ کو خطرات لاحق ہیں ؟ – Kashmir Link London

ٹاور آف لندن کا ایک کوا مزید کم ہوگیا، کیا تاج برطانیہ کو خطرات لاحق ہیں ؟

لندن (کشمیر لنک نیوز) کسی بھی ملک کی روایات اسکی تاریخ کی آئینہ دار ہوتی ہیں یہی وجہ ہے ہر قوم اپنی تاریخ کو سنہرے حروف میں لکھنے کی خواہشمند ہوتی ہے، تاہم کچھ ممالک ایسے بھی ہیں جنکی تاریخ اتنی متنوع ہے کہ اسکی عجیب و غریب روایات بھی دنیا بھر کیلئے دلچسپی کا باعث بن جاتی ہیں۔

برطانوی دارالحکومت کا ٹاور آف لندن بھی اپنی ایک تاریخی اہمیت رکھتا ہے لیکن اسکے ساتھ جڑی کچھ روایات ایسی ہیں جنہیں آج بھی زندہ رکھا گیا ہے تاکہ تاریخ کی خوبصورتی مسخ نہ ہو۔ مثال کے طور پر ٹاور آف لندن میں ہمیشہ سے کچھ خاص قسم کے کوے بسیرا کیئے رکھتے ہیں جنہیں وہاں کا محافظ کہا جاتا ہے۔ ایک عام تاثر ہے کہ انکی تعداد چھ سے ک نہیں ہونی چاہیئے۔

شاہی خاندان کی روایت یا توہم پرستی کے مطابق ٹاور آف لندن میں کم از کم 6 جنگلی کوے ہر وقت موجود ہونے چاہیئیں تاہم کوے گم ہوجانے یا اڑجانے کی صورت میں تاج برطانیہ کو ٹوٹنے کا خطرہ رہے گا۔ اب خبر آئی ہے کہ ایک مزید کوا وہاں سے غائب ہے۔


برطانیہ کے ٹاور آف لندن کا ایک اور کوا غائب ہونے کے بعد بدشگونی کی افواہیں پھیلنے لگی ہیں۔ ٹاور کے ماسٹر کی جانب سے یہ اعلان کیا گیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ ایک کوا غائب ہوگیا ہے اور اس کے مرجانے کا امکان زیادہ ہے۔


ماسٹر کے مطابق اگر کوے ٹاور کو چھوڑ دیں گے تو برطانوی تخت کو نقصان پہنچے گا۔ ٹاور آف لندن میں جنگلی کوے رکھنے کی روایت 17 ویں صدی سے برطانوی بادشاہ چارلس دوئم کے زمانے سے چلی آرہی ہے۔

چارلس دوئم کوے کو قوم اور بادشاہت کا تحفظ سمجھتے تھے اور ان کا ماننا تھا کہ پرندوں کے اڑ جانے سے سلطنت گر جائے گی۔ خیال رہے کہ اس وقت برطانیہ میں کورونا وائرس تیزی سے پھیل رہا ہے اور اس کے باعث برطانیہ جنگ عظیم سے اب تک کی سب سے مشکل ترین صورتحال سے دوچار ہے۔

50% LikesVS
50% Dislikes