ایک ویک اینڈ کی کہانی: کرسٹن اسٹیورٹ، لیڈی ڈیانا کے روپ میں فلم سپنسر میں جلوہ افروز ہونگی – Kashmir Link London

ایک ویک اینڈ کی کہانی: کرسٹن اسٹیورٹ، لیڈی ڈیانا کے روپ میں فلم سپنسر میں جلوہ افروز ہونگی

لندن (عدیل خان) برطانیہ سمیت دنیا بھر کے لوگوں کے دلوں پر اپنی مشفقانہ طبیعت اور انسانی ہمدردی کی بنا پر راج کرنے والے شہزادی ڈیانا پر ایک نئی فلم بننے جارہی ہے جسکی خبر ریلیز ہونے پر سبھی کی نگاہیں وہ کردار ادا کرنے والی شخصیت پر جم گئی ہیں۔

اطلاعات کے مطابق ’سپنسر‘ نامی اس فلم میں امریکی اداکارہ کرسٹین سٹیوورٹ نے برطانوی شہزادی ڈیانا کا کردار نبھایا ہے۔
کرسٹین سٹیوورٹ کی لیڈی ڈیانا کے روپ میں پہلی تصویر آج ہی عالمی میڈیا میں شائع کی گئی ہے جس میں وہ بالکل اپنے اصلی کردار کے ہو بہ ہو دکھائی دے رہی ہیں۔

فلم کا سکرپٹ سٹیون نائٹ نے لکھا ہے جو دراصل شہزادی ڈیانا اور شہزادہ چارلس کی زندگی کے اس لمحے کے گرد گھومتا ہے جب لیڈی ڈیانا نے اپنی پریشان کن شادی کو ختم کرنے کا فیصلہ کر لیا تھا۔
یہ مکمل فلم اس ایک ویک اینڈ کی کہانی بیان کرتی ہے جب لیڈی ڈیانا شاہی خاندان کے ساتھ چھٹیاں گزارنے گئی ہوئی تھیں۔

واضع رہے دسمبر 1991 میں شہزادی ڈیانا کے اپنے شوہر شہزادہ چارلس کے ساتھ تعلقات سرد مہری کا شکار ہو گئے تھے۔ لیکن اس کے باوجو دیکھنے والوں کو حالات معمول کے مطابق ہی دکھائی دے رہے تھے۔

یہ سال 1991 کا کرسمس تھا جب بظاہر سب کچھ ٹھیک تھا اور سبھی کرسمس کی خوشیاں منانے میں مصروف تھے لیکن شہزادی ڈیانا کو معلوم تھا کہ حالات میں تبدیلی آنے والی ہے۔ شاید یہ وہی ویک اینڈ تھا جب لیڈی ڈیانا نے شہزادہ چارلس سے علیحدگی کی خواہش کے حوالے سے شاہی خاندان کو آگاہ کیا تھا۔
حقیقت میں اگلے ہی سال 1992 میں شہزادی ڈیانا اور شہزادہ چارلس کے درمیان علیحدگی ہو گئی تھی، لیکن طلاق اگست 1996 میں ہوئی تھی۔

کرسٹین سٹیوورٹ کی شہزادی ڈیانا کے روپ میں تصویر شیئر ہوتے ہی ٹوئٹر صارفین کے تبصرے شروع ہو گئے ہیں اکثریتی افراد انہیں شہزادی ڈیانا کے روپ میں پسند کررہے ہیں۔ ایک ٹوئٹر صارف نے ڈیانا کی پرانی تصویر اداکارہ کے ساتھ لگائی اور دونوں کی حیران کن مماثلت پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ، خیال رہے کرسٹین سٹیوورٹ بائیں جانب والی ہیں۔

اس فلم کی شوٹنگ جرمنی اور برطانیہ میں کی جائے گی جبکہ فلم اگلے سال لیڈی ڈیانا کی موت کی سلور جوبلی کے موقع پر ریلیز کی جائے گی۔

50% LikesVS
50% Dislikes